150

پاکستانی سکولوں میں چینی زبان لازمی، سینیٹ میں قرارداد منظور

اسلام آباد (پاکستان اپ ڈیٹس ) سینیٹ نے پاکستانی سکولوں میں چینی زبان لازمی پڑھانے سے متعلق قرارداد منظور کر لی، قرارداد کی مخالفت کرتے ہوئے حکومت کو شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ ایوانِ بالا میں پاکستانی سکولوں میں چینی زبان لازمی پڑھانے سے متعلق قرارداد سینیٹر خالدہ پروین نے پیش کی۔ چیئرمین سینیٹ میاں رضا ربانی نے ریمارکس دیئے کہ آپ چینی زبان کو ہمارے اوپر کیوں مسلط کرنا چاہتی ہیں؟ جب علاقائی زبانوں کو لازمی قرار نہیں دے پا رہے تو چینی زبان کو کیسے لازمی قرار دیں؟ دوسری جانب حکومت نے قرارداد کی مخالفت کر دی۔ وزیرِ مملکت جام جمال نے ایوان میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ چینی زبان کو تمام سکولوں میں لازمی پڑھانے سے متعلق قرارداد کی مخالفت کرتے ہیں۔ قرارداد میں سے لازمی کا لفظ ختم کر کے حوصلہ افزائی کا لفظ شامل کیا جائے تو حمایت کریں گے۔ حکومت کی جانب سے مخالفت کے باعث قرارداد پر ووٹنگ کرائی گئی تو حکومت کو شکست کا سامنا کرنا پڑا اور ایوان نے قرارداد منظور کر لی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں