215

نظریہ پاکستان رابطہ کونسل کے زیر اہتما م لاہور سمیت چاروںصوبوں وآزاد کشمیر کے مختلف شہروں و علاقوں میں استحکام پاکستان کارواں،جلسوں اور کانفرنسوں کا انعقاد

لاہور(پاکستان اپ ڈیٹس ) نظریہ پاکستان رابطہ کونسل کے زیر اہتمام یوم پاکستان کے موقع پرلاہور سمیت چاروں صوبوں وآزاد کشمیر کے مختلف شہروں و علاقوں میں استحکام پاکستان کارواں،جلسوں اور کانفرنسوں کا انعقاد کیا گیاجن میں مذہبی و سیاسی جماعتوں کے رہنماﺅں نے خطابات کئے جبکہ تمام مکاتب فکر اور شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔استحکام پاکستان کارواں، کانفرنسوں اور جلسوں میں شریک افراد میں زبردست جوش وجذبہ دیکھنے میں آیا۔صوبائی دارالحکومت لاہور میں چوبرجی سے اسمبلی ہال تک استحکام پاکستان کارواں کا انعقاد کیا گیا جس میں شہریوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔مذہبی و سیاسی قائدین پروفیسر حافظ عبدالرحمن مکی، مولانا امیر حمزہ، محمد یعقوب شیخ، ابوالہاشم ربانی، حافظ خالد ولید و دیگر نے کہا ہے کہ ہم نظریہ پاکستان کاتحفظ اور قوم کو دشمن کے مقابلہ کیلئے سیسہ پلائی دیوار بنائیں گے۔ بلوچستان میں نسلی عصبیت او ر گروہی سیاست کوپروان چڑھانے کیلئے کروڑوں ڈالر خرچ کئے جارہے ہیں۔ بھارت سے دوستی و تجارت کیلئے نظریہ پاکستان کو کمزور کرنے کی سازشیں قوم کامیاب نہیں ہونے دے گی۔نظریہ پاکستان رابطہ کونسل کے تحت ملک بھر میں استحکام پاکستان کارواں، جلسوں اور ریلیوں کے میں شریک افراد نے ہاتھوں میں پلے کارڈزاور بینرزاٹھا رکھے تھے جن پر نظریہ پاکستان کے حوالہ سے تحریریں درج تھیں۔اس دوران شرکاءکی جانب سے پاکستان کا مطلب کیا‘ لاالہ الااللہ کے فلک شگاف نعرے لگائے جاتے رہے۔لاہور میں چوبرجی چوک سے اسمبلی ہال تک کارواں کے شرکاءموٹر سائیکلوں اورگاڑیوں پر سوار تھے جبکہ سینکڑوں افراد پیدل بھی چل رہے تھے۔شرکاءکی کثیر تعداد نے سبز ہلالی پرچم اٹھا رکھے تھے۔کارواں چوبرجی چوک سے قرطبہ چوک،گنگا رام ہسپتال سے ہوتا ہوا چیئرنگ کراس پہنچا۔راستے میں شرکاءپر پھولوں کی پتیاں نچھاور کر کے بھر پور استقبال کیا گیا۔شرکاءپاکستا ن سے رشتہ کیا،لاالہ الااللہ،مودی کا جو یار ہے غدار ہے، غدار ہے،کشمیریوں سے رشتہ کیا لاالہ الااللہ،نظریہ پاکستان ہی بقائے پاکستان ہے جیسے نعرے لگاتے رہے۔اسمبلی ہال پہنچنے پربڑے جلسہ عام کا انعقاد کیا گیا جس سے نظریہ پاکستان رابطہ کونسل کے مرکزی رہنما ابوالہاشم ربانی،حافظ خالد ولید، مولانا ادریس فاروقی حافظ مسعود الرحمان جانباز،اسحاق قاسم ،حافظ احسان الہی،حافظ اشفاق، میاں محمود ،حافظ ابتسام،شیخ نعیم،فیاض خان نے خطاب کیا۔نظریہ پاکستان رابطہ کونسل کے مرکزی رہنما ابوالہاشم ربانی نے کہا کہ زندہ دلان لاہور کو مبارک ہو،قائداعظم کی قیادت میں قرارداد پاکستان کو منظور کروانے کے لئے اسی شہر لاہور کا انتخاب کیا گیا تھا۔آج 23مارچ ہے ،ہم اسی جوش،جذبے ،ولوے سے اعلان کرتے ہیں کہ اگر اسوقت پاکستان بنانے کے لئے عزم کیا گیا تھا کہ بٹ کے رہے گا ہندوستان،بن کر رہے گا پاکستان تو ہم بھی اب یہ عزم کرتے ہیں کہ پاکستان مضبوط و مستحکم ہو گا اور کشمیر بھی آزاد ہو گا۔نظریہ پاکستان ہی بقائے پاکستان ہے یہ نعرہ ملک کے کونے کونے میں پہنچائیں گے۔حافظ خالد ولید، مولانا ادریس فاروقی،حافظ مسعود الرحمان جانباز،اسحاق قاسم، حافظ احسان الہی، میاں محمود، حافظ اشفاق، حافظ ابتسام ،ملی رکشہ یونین کے رہنما شیخ نعیم ،مزدوررہنما فیاض خان ودیگر نے کہا کہ پاکستان کی بنیاد دو قومی نظریہ ہے لیکن افسوس کی آج تعلیمی اداروں سے اس نظریئے کو نکالا جا رہا ہے۔افسانے اور کہانیاں تعلیمی اداروں کے نصاب میں شامل کر دی گئی ہیں۔نظریہ پاکستان کے محافظ میدان میں آ چکے ہیں اور منزل کی جانب رواں دواں ہیں۔ نوجوان نظریہ پاکستان کے لئے کردار ادا کریں۔فیصل آباد میں نظریہ پاکستان رابطہ کونسل کے زیر اہتمام ہلال احمر چوک سے گھنٹہ گھر چوک تک بڑے نظریہ پاکستان کارواں کا انعقاد کیا گیا جس میں شہر بھر سے ہزاروں افراد نے شرکت کی۔بعد ازاں کارواں کے اختتام پر کچہری بازار میں جلسہ عام کا بھی انعقا دکیا گیا۔ کارواں اور جلسہ عام سے دفاع پاکستان کونسل کے مرکزی رہنما پروفیسر حافظ عبدالرحمان مکی،شیخ فیاض احمد و دیگر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نظریہ پاکستان کا تقاضا ہے کہ حرمت رسولﷺ اورختم نبوت کے ساتھ پاکستان کے دستو ر کی حفاظت کی جائے۔تکمیل پاکستان کی طرف آیا جائے اور کشمیر کو پاکستان کا حصہ بنایا جائے۔نظریہ زندہ رہے گا اس کے دشمن مٹ جائیں گے۔ ملتان میںدولت گیٹ چوک سے نواں شہر چوک تک نظریہ پاکستان رابطہ کونسل کے زیر اہتمام کارواں نکالا گیاجس کی قیادت تحریک حرمت رسول ﷺ کے چیئرمین مولانا امیر حمزہ اور میاں سہیل احمد نے کی۔مولانا امیر حمزہ اور میاں سہیل احمد نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نظریہ پاکستان ہی بقائے پاکستان ہے۔ پاکستان لاالہ الااللہ کی بنیاد پر قائم ہوا ہے اور تمام مسلمانوں کے ساتھ ہمارا رشتہ اسی کلمے کی بنیاد پر ہے۔نظریہ پاکستان ہی اسلام اور پاکستان کا محافظ ہے ۔کراچی میںنظریہ پاکستان رابطہ کونسل کے زیر اہتمام یونیورسٹی روڈ سفاری پارک سے مزار قائد تک نظریہ پاکستان کارواں کا انعقاد کیا گیاجس میں تمام مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے ہزاروں افراد نے شرکت کی۔ اس موقع پر نظریہ پاکستان رابطہ کونسل کے چیئرمین قاری یعقوب شیخ، ڈاکٹر مزمل اقبال ہاشمی ،محفوظ یار ایڈوکیٹ،عقیل انجم،قاضی احمد نورانی،مطلوب اعوان ودیگر نے خطاب کیا ۔حیدر آباد سندھ میں نظریہ پاکستان رابطہ کونسل کے تحت ریلی کی قیادت فیصل ندیم و دیگر نے کی۔ ریلی میں شہریوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی اور یوم پاکستان بھرپور انداز میں منایا گیا۔ اسی طرح سندھ کے دیگر شہروں میں بھی جلسوںاور ریلیوں کا انعقاد کیا گیا۔ راولپنڈی میں صدر سے لیاقت باغ تک ریلی نکالی گئی جس کی قیادت مولانا عبدالرحمان نے کی۔ریلی میں شہریوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ریلی کے اختتام پر مولانا عبدالرحمان نے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسلام اور ملک دشمن عناصر کی خوفناک سازشوں کو مدنظر رکھتے ہوئے ہم پورے ملک کے کونے کونے میں احیائے نظریہ پاکستان مہم چلارہے ہیں تاکہ لوگوں کو قیام پاکستان کے حقیقی مقاصد سے آگاہ کیا جائے۔کوئٹہ میں نظریہ پاکستان رابطہ کونسل کے زیر اہتمام مرکز اقصیٰ تا پریس کلب نظریہ پاکستان کارواں کا انعقاد کیا گیا جس کی قیادت حافظ عبدالرﺅف،مولانا محمد اشفاق نے کی۔حافظ عبدالروف نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھارت سے دوستی و تجارت کیلئے نظریہ پاکستان کو کمزور کرنے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔ہم نظریہ پاکستان کاتحفظ اور قوم کو دشمن کے مقابلہ کیلئے سیسہ پلائی دیوار بنائیں گے۔ بلوچستان میں نسلی عصبیت او ر گروہی سیاست کوپروان چڑھانے کیلئے کروڑوں ڈالر خرچ کئے جارہے ہیں۔پشاور میں فوارہ چوک صدرسے پریس کلب تک نظریہ پاکستان ریلی نکالی گئی جس میں تمام مکاتب فکر اور شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ گوجرانوالہ میں مرکز اقصیٰ سے شیرانوالہ باغ تک ریلی نکالی گئی جس کی قیادت احسان اللہ نے کی۔نظریہ پاکستان رابطہ کونسل کے زیر اہتمام ملک بھر کی طرح جنوبی پنجاب کے مختلف شہروں ساہیوال، وہاڑی، خانیوال، بہاولپور، مظفر گڑھ اور ڈیرہ غازی خاں میں نظریہ پاکستان کارواں، جلسوں اور کانفرنسوں کا انعقاد کیا گیاجن میں ہزاروں افراد نے شرکت کی اور نظریہ پاکستان کو اجاگر کیا گیا۔نظریہ پاکستان رابطہ کونسل کے زیر اہتمام سیالکوٹ،چکوال، قصور، ڈسکہ، ساہیوال، اوکاڑہ،جہلم، بھمبھر، کوٹلی، مظفر آباد، ڈیرہ اسمعیل خاں، میانوالی، سرگودھا، خوشاب ،منڈی بہاﺅالدین، نوشہرہ ، مردان، کوہاٹ، تلہ گنگ، وزیر آباد، بھکر، اٹک، ایبٹ آباد، مانسہرہ، ہر ی پور، ہزارہ،،میر پور، کوٹلی، جھنگ، چنیوٹ، رحیم یار خاں، روہڑی، سکھر، بدین، کھڈیاں خاص، ٹنڈو آدم، شہداد پور، نواب شاہ، چمن، ژوب، میر پور خاص و دیگر شہروں و علاقوںمیں بھی نظریہ پاکستان کانفرنسوں اور جلسوں کا انعقاد کیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں