183

رائٹرز گلڈ آف اسلام کی جماعة الدعوة اور فلاح انسانیت فاونڈیشن کے اثاثے منجمد کرنے کی شدید مذمت

لاہور(پاکستان اپ ڈیٹس)رائٹرز گلڈ آف اسلام کے مرکزی رہنماﺅں محمد شاہد محمود،فاروق حارث العباسی،نسیم الحق زاہدی،محمد راشد تبسم،رابعہ عظمت،عبدالحنان،حسن یحییٰ نے کہا ہے کہ بھارتی و امریکی ڈکٹیشن پر جماعةالدعوة کے تعلیمی ادارے، ایمبولینسیں، ڈسپنسریاں اور دیگر اثاثہ جات پر قبضہ کرنا صریح ظلم اور زیادتی ہے اور ہم جماعة الدعوة اور فلاح انسانیت فاونڈیشن کے اثاثے منجمد کرنے کی شدید مذمت کرتے ہے کہ نیا صدارتی آرڈیننس صرف جماعةالدعوة ہی نہیں پورے ملک کے خلاف ہے۔ دشمن قوتوں کا اصل ٹارگٹ سی پیک اور پاکستان کا ایٹمی پروگرام ہے۔ حکمران قوم کا وقار مت مجروح کریں۔اپنے فیصلے خود کریں۔بھارت نے ممبئی حملوں کے وقت حافظ محمد سعید پر الزامات لگائے تھے لیکن آج تک ثابت نہیں کر سکا۔عدالت نے حافظ محمد سعید کو رہا کیااور اب حکومت کا جماعة الدعوة ،فلاح انسانیت فاﺅنڈیشن کے اثاثے منجمند کرنے کا فیصلہ ملکی سالمیت کے خلاف ہے۔حکومت خود تعلیم،صحت کے شعبہ میں ناکام ہو چکی ہے۔ہسپتالوں کو تباہ کر دیا گیا ہے۔اب حکومت ایف آئی ایف کے اچھے اداروں کو بھی تباہ کرنا چاہتی ہے۔ ،ان خیالات کااظہار محمد شاہد محمود،فاروق حارث العباسی،نسیم الحق زاہدی،محمد راشد تبسم،رابعہ عظمت،عبدالحنان،حسن یحییٰ نے اپنے ایک بیان میں کیا۔رہنماﺅں نے کہا کہ حافظ محمد سعید کو جب عدالت نے رہا کیا تو امریکہ و بھارت نے بہت شور مچایا جس پر پاکستان نے شواہد مانگے مگر کوئی شواہد امریکا و بھارت نے نہیں دیئے۔ جماعة الدعوة کا ملک بھر میں کام ہے۔قدرتی آفات میں انہوں نے بہت کام کیا۔کشمیر کے لئے بھی کام کر رہے ہیں۔حکومت ملک کے خلاف ہونے والے پروپیگنڈہ کا توڑ کرنے میں ناکام ہو چکی ہے۔چار سال تک ملک کا وزیر خارجہ ہی نہیں لگایا گیا۔اس پر افسوس ہی کیا جا سکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ جماعة الدعوة نے بلوچستان میں بڑے پیمانے پر خدمت خلق کا کام کیا۔جب زلزلہ آیا تو لوگوں کے گھر تباہ ہو گئے تھے انہوں نے گھر بنا کر دیئے۔میڈیکل کیمپ لگائے ،پانی کے کنویں کھودے،ہم ان کی خدمات کو سراہتے ہیںاور حکومتی اقدامات کی بھرپور مذمت کرتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں