125

کشمیریوں کے قتل عام کے خلاف المحمدیہ سٹوڈنٹس کالاہور پریس کلب کے سامنے مظاہرہ

 لاہور(پاکستان اپ ڈیٹس ) المحمدیہ سٹوڈنٹس کے زیر اہتمام بھارتی فوج کی جانب سے کشمیریوں کے قتل عام کے خلاف پریس کلب کے سامنے مظاہرہ کیا گیا جس میں سینکڑوں نوجوان طلبا نے شرکت کی۔ مظاہرے میں شریک طلبانے بھارت کے خلاف شدید نعرے بازی کی اور کشمیریوں کو اپنی بھرپور حمایت کا یقین دلایا ۔ مزید براں مظاہرین نے ہا تھوں میں پلے کارڈز اور فلیکس اٹھا رکھے تھے جن پر کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لیے پیغام درج تھے۔ اس موقع پر مسﺅل المحمدیہ سٹوڈنٹس پاکستان عبدالحنان خالد نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی فوج کشمیریوں پر ظلم کے پہاڑ توڑ رہی ہے۔ آج بھی وادی کے ضلع شوپیاں میں16 معصوم نہتے کشمیریوں کو بے دردی سے قتل کرتے ہوئے شہید کر دیا گیاا ور سینکڑوں کو زخمی کر دیا گیا جس کی ہم بھرپور الفاظ میں مذمت کرتے ہیں۔ ان کشمیریوں کا جرم صرف اتنا تھا کہ وہ اپنے حقوق کی خاطر سڑکوں پر نکلے تھے۔ بھارتی فوج وادی کشمیر میں مسلسل کشمیریوں پر ظلم ڈھا رہی ہے۔ لاکھوں کشمیریوں کو عقوبت خانوں میں ڈال دیاگیا اور ہزاروں کشمیریوں کو ہی لاپتہ کر دیا گیا ۔ کشمیریوں سے حق خودرادیت کا وعدہ کرنے والی عالمی برادری بھارتی فوج کے اس ظلم و ستم پر کیوں چپ سادھ بیٹھی ہے۔ مگر افسوس تو اس بات کا ہے کہ حکومت پاکستان اپنا وہ کردار ادا نہیں کر رہی جوکرنے کا حق ہے۔ آج کشمیری عوام پاکستان سے ملنے کیلئے بھارتی فوج کی گولیوں کا سامنا کر رہی ہے مگر پاکستان کی عوام کشمیریوں پر ہونے والے جبر سے لا علم ہے۔ المحمدیہ سٹوڈنٹس پاکستان کے مرکزی رہنما جنید الرحمن نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بھارت کشمیر میں انسانی حقوق کی شدید خلاف ورزی کا مرتکب ہو رہا ہے اور کشمیریوں کی جائزتحریک آزادی کو دبانے کیلئے منفی ہتھکنڈے آزما رہا ہے۔کشمیری عوام عالمی برادری کی طرف سے کئے گئے وعدے کی تکمیل کیلئے آئے روز سڑکوں پر مظاہرے کرتے ہیں جن پر بھارتی فوج ظلم و جبر کے پہاڑ توڑتی ہے۔ بھارت کشمیریوں کی آواز دبانے کیلئے وادی بھر میں مہلک ہتھیاروں کا استعمال کر رہا ہے اور آئے روز نام نہاد مقابلوں کی آڑ میں معصوم کشمیریوں کو شہید کر رہا ہے جس کی تازہ مثال آج کا شوپیاں میں ہونے والا قتل عام ہے۔ ہم اقوام متحدہ دے اپیل کرتے ہیں کہ وہ کشمیر پر کئے ہوئے اپنے وعدے کو جلد از جلد پورا کرئے۔ مرکزی رہنما المحمدیہ سٹوڈنٹس محمد شعیب نے کہا کہ بھارت نے آج وادی کے ضلع شوپیاں میں ریاستی دہشتگردی کی بدترین مثال قائم کی ہے بھارت نے کشمیر پرناجائز اور غاصبانہ قبضہ کیا ہو اہے ان معصوم کشمیریوں پر ظلم کے پہاڑ توڑ رہا ہے اور انہیں حق خود ارادیت دینے سے انکاری ہے۔آئے روز سرچ آپریشنز کے نام پر کشمیریوں کو ہراساںکیاجاتا اور انکی املاک کو نقصان پہنچایا جاتا ہے۔ ان سے بنیادی انسانی حقوق بھی چھینے جا رہے ہیں۔ آج کشمیری لوگ کشمیر کی آزادی کی جنگ نہیں، بلکہ تکمیل پاکستان کی جنگ لڑ رہے ہیں۔کشمیری اپنے شہدا کو پاکستانی پرچم میں دفن کرتے ہیں جو پاکستان سے بے پناہ محبت کا ثبوت ہے۔ کشمیری عوام سبز ہلالی پرچم اٹھائے اپنا حق مانگتے نظر آتے ہیں۔ دیگر مقررین نے گفتگو کرتے ہوئے کہا دنیا کی سب سے بڑی نام نہاد جمہوریت کشمیر میں عالمی قوانین کی خلاف ورزیاں کر رہا ہے۔ ہم اقوام متحدہ سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ کشمیر کے مسئلے کو حل کرنے کیلئے اپنا کردار ادا کرئے۔ کیونکہ کشمیر کا مسئلہ حل ہونے تک جنوبی ایشیا میں امن قائم نہیں ہو سکتا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں