75

پاکستان اور سعودی عر ب کیخلاف گھیرا تنگ کیا جا رہا ہے’ساجد میر

گوجرانوالہ(پاکستان اپ ڈیٹس )پاکستان کی جغرافیائی اور نظریاتی سرحدوں کے پر عزم دفاع کے ساتھ ساتھ ارض حرمین الشریفین اور عالم عرب کا مشترکہ دفا ع مضبوط سے مضبوط تر بنانے کیلئے اسلامی عسکری اتحاد کو مضبوط بنانا ہوگا۔متحدہ مجلس عمل کے قیام سے سیکولر لابیوں کا راستہ روکا جا سکتا ہے، ہم سیاست اقتدار کیلئے نہیں بلکہ اسلامی اقدار کے تحفظ کیلئے کرتے ہیں، شام ،عراق کا امن تباہ کرنے والی قوتوں کا اگلا ہدف پاکستان اور سعودی عرب ہیں، ان حالات میں اگر ہم متحد نہ ہوئے تو ہمیں نقصان اٹھانا پڑ سکتا ہے، ان خیالات کا اظہار مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے سربراہ سینیٹر پروفیسر ساجد میر نے گوجرانوالہ میں ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ سیاسی و معاشی عدم استحکام کا شکار کر کے عالم اسلام کے وسائل پر قبضہ کرنے کا منصوبہ اسلامی ممالک کے اتحاد سے ناکام بنایا جا سکتا ہے، پوری امت مسلمہ سعودی عرب اور پاکستان کے تحفظ کیلئے کسی قسم کی قربانی دینے سے دریغ نہیں کرے گی، ایک سوال کے جواب میں سینیٹر ساجد میر نے کہا کہ انجینئرڈ الیکشن اور کنٹرولڈ ڈیموکریسی عوام کو ہرگز قبول نہیں ہے۔ فیصلوں کے تحت پاکستان میں انجینئرڈ جمہوریت لانے کی سازش کی جارہی ہے، جسے قوم کسی صورت قبول نہیں کرے گی۔ انہوں نے کارکنان مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستا ن کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ہماری جدو جہد دین کی دعوت اور دین کے نفاذ کی ہے، کارکنان اپنی اس ذمہ داری کو ادا کریں، انہوں نے کہا کہ آل پاکستا ن اہل حدیث کانفرنس کی کامیابی میں تمام اہلحدیثوں کی مشترکہ جدو جہد شامل ہے ، جس پر میں تمام کارکنان اور عہدیداران بالخصوص گوجرانوالہ شہر کے ذمہ داران کو مبارک دیتا ہوں۔اس موقع پر سینئر نائب ناظم اعلیٰ مرکزی جمعیت اہلحدیث پاکستان مولانا محمد نعیم بٹ، شیخ الحدیث مولانا عبد الحمید ہزاروی، مولانا محمد صادق عتیق، شیخ الحدیث پروفیسر قاری سعید کلیروی، صاحبزادہ حافظ محمد عمران عریف اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں