42

ہمارے نوجوان پاکستان کا اثاثہ ہیں۔ مستقبل قریب میں ملک کی بھاگ دوڑ انہی طلبا کے ہاتھوں میں ہوگی۔حافظ عبدالرﺅف

فیصل آباد (پاکستان اپ ڈیٹس )المحمدیہ سٹوڈنٹس کے زیر اہتمام شہر بھر کی یونیورسٹیز اور کالجز کے طلبا کے لیے سیمینار کا انعقاد کیا گیا ،جس میں ہزاروں طلبا نے شرکت کی۔ سیمینار میں معروف سماجی رہنما حافظ عبدالرﺅف، مسﺅل المحمدیہ سٹوڈنٹس پاکستان عبدالحنان خالد، مسﺅل المحمدیہ سٹوڈنٹس یونیورسٹیز ڈیپارٹمنٹ محمد شعیب نے خصوصی شرکت کی۔ نشاط آباد روڈ پر مقامی ہال میں ”آر یو ریڈی ٹو سرو پاکستان“ کے عنوان سے ہونے والے سیمینار میں یونیورسٹی آف ایگریکلچر فیصل آباد،جی سی یونیورسٹی ، نیشنل ٹیکسٹائل یونیورسٹی اور دیگر یونیورسٹیز اور کالجز کے طلبا نے شرکت کی۔ شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے معروف سماجی رہنما حافظ عبدالرﺅف نے کہا کہ ہمارے نوجوان پاکستان کا اثاثہ ہیں۔ مستقبل قریب میں ملک کی بھاگ دوڑ انہی طلبا کے ہاتھوں میں ہوگی۔دنیا میں نوجوانوں کی سب سے زیادہ شرح پاکستان میں ہے۔ مگر بد قسمتی سے ہمارے نوجوان مغرب کی تہذیب سے متاثر ہو کر احساس کمتری کا شکار ہو گئے ہیں۔ نوجوان طلبا اپنی ذات کیلئے تو زندگی بسر کر رہے ہیں مگر پاکستان کے لیے اپنا وہ کردار ادا نہیں کر رہے ، جو ادا کرنے کی ضرورت ہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ پاکستان اسلام کی سرزمین ہے جو کہ مدینہ ثانی ہے۔ پاکستان کا معرض وجود میں آنا کسی معجزے سے کم نہیں ہے۔ جس رات قرآن نازل ہوا اسی27 رمضان المبارک کی رات پاکستان کا قیام ہوا۔امت مسلمہ کا تحفظ اس ملک کیساتھ منسلک ہے۔ اللہ نے پاکستان کو بہت سے وسائل و معدنیات سے نوازا ہے۔ ہمیں اپنے پاکستانی ہونے پر اللہ کا شکر ادا کرنا چائیے اور ملک کی تعمیر و ترقی میں کلیدی ادا کرنے کی ضرورت ہے۔ مسﺅل المحمدیہ سٹوڈنٹس پاکستان عبدالحنان خالد نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے نوجوان خداداد ذہانت اور صلاحیتیوں سے مالا مال ہیں۔ دشمن نے ہمارے خلاف کئی محاذ کھول رکھے ہیں۔ ہماری نظریاتی سرحدوں کو کھوکھلا کرنے کیلئے سازشیں جاری ہیں۔ یونیورسٹیز میں پڑھنے والے نوجوان طلبا میں سیکولرازم اور الحاد جسے فتنوں کو پروان چڑھایا جا رہا ہے۔ منشیات کے رحجان کو عام کر کے طلبا کو ان کے اصل مقصد سے ہٹانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔بد قسمتی سے ہمارے نوجوان ان سازشوں کو شکار ہو رہے ہیں۔ ہمیں اپنے دشمنوں کی سازشوں کو پہچان کر ان کا قلع قمع کرنا ہے۔ المحمدیہ سٹوڈنٹس اپنا فریضہ سمجھتے ہوئے پاکستان کے ادارہ جات میں نظریہ پاکستان اور انسداد منشیات کی دعوت کو پھیلا رہی ہے۔ مسﺅل المحمدیہ سٹوڈنٹس یونیورسٹیز ڈیپارٹمنٹ محمد شعیب نے کہا کہ دنیا کا منظر نامہ بڑی تیزی سے بدل رہا ہے اور آنے والے وقت میں پاکستان کا اس میں بہت اہم کردار ہو گا۔دشمن ہمارے نظریات کیساتھ کھیلتے ہوئے ہمارے وجود کو ختم کرنا چاہتا ہے جس کو ہم ناکام بنانا ہے۔ ہمیں بطور طالب علم نہیں، بلکہ بحثیت پاکستانی اپنی ذمہ داریوں سے واقف ہونے کی ضرورت ہے۔ہمیںاپنے منفرد اور شاندار ماضی کو دیکھتے ہوئے اپنی نسلوں کیلئے ملت کی ترقی میں اپنا کردار ادا کرنے کی ضرورت ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں