172

تھانہ سٹی چکوال کے علاقے محلہ فاروقی چکوال شہر میں موٹر سائیکل سوار چاقوگروپ کی آمد۔۔۔چکوال کی مزید خبریں

چکوال(عبدالغفور منہاس سے) تھانہ سٹی چکوال کے علاقے محلہ فاروقی چکوال شہر میں موٹر سائیکل سوار چاقوگروپ کی آمد، ایک شادی شدہ خاتون اور دوسری نوجوان لڑکی کو چاقوگروپ نے چاقو مار کر شدید زخمی کردیا، ملزمان فرار ہونے میں کامیاب، تھانہ سٹی چکوال پولیس نے دونوں خواتین کی مدعیت میں الگ الگ مقدمات درج کرلیے، تفصیلات کے مطابق تھانہ سٹی چکوال میں درج کرائے جانے والے مقدمہ نمبر98میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ ماریہ اختر زوجہ حسن علی ساکن محلہ فاروقی چکوال شہر گھر سے باہردوکان کی جانب جا رہی تھی کہ اسی دوران نامعلوم موٹر سائیکل سوار آئے اور چاقو سے اس خاتون پر حملہ کردیا اور اسکے زخمی ہونے کے بعد خود فرار ہو گئے، دوسرا واقعہ بھی محلہ فاروقی میں پانچ گھنٹے بعد پیش آیا جس میں موٹر سائیکل نمبر6941پر سوار نوجوان آئے اور برقعہ پوش نوجوان لڑکی کائنات دختر قیوم کو چاقو مار کر شدید زخمی کرنے کے بعد فرار ہوگئے۔ ایس ایچ او تھانہ سٹی چکوال انسپکٹر زراعت بلوچ اطلاع ملتے ہی موقع پر پہنچ گئے اور زخمی خواتین کو ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال چکوال منتقل کردیا گیا جبکہ پولیس نے مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کردی ہے۔ پولیس کے مطابق ابتدائی تفتیش میں خواتین پر ہونے والے حملوں میں دشمنی نظر نہ آرہی ہے۔عوامی حلقوں نے اس واقعہ کو نئے تعینات ہونے والے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر چکوال ذوالفقار احمد کے لئے بڑا چیلنچ قرار دیا ہے ۔

چکوال(بیو رو رپورٹ)صوبائی اسمبلی پنجاب کے حلقہ پی پی بیس میں ضمنی الیکشن میں ہونے والی الیکشن ضابطہ اخلاق کی واضح خلاف ورزیوں کے خلاف الیکشن کمیشن آف پاکستان میں دائر تین بڑے ریفرنسز کی سماعت آج انیس اپریل بروز جمعرات کو چیف الیکشن کمشنر آف پاکستان جسٹس(ر) سردار محمد رضا خان کی سربراہی میں ہوگی،جس میں پاکستان مسلم لیگ (ن) کے ایم این اے میاں حمزہ شہباز شریف، ایم این اے میجر(ر) طاہراقبال،ایم پی اے سردار ذوالفقار علی خان دولہہ، ایم پی اے چوہدری سلطان حیدرعلی خان اور وائس چیئرمین ضلع کونسل چکوال چوہدری خورشید بیگ ڈھڈیال کو حاضر ہونے کے لئے نوٹسز جاری کیے گئے تھے آج سماعت کے دوران الیکشن ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر لیگی ایم پی اے کے حق میں جلسہ منعقد کرنے اور بعدازاں افتتاحی تقریب میں شریک ہونے اور آخر میں افتتاحی اور جلسہ والے مقام کو حلقہ پی پی بائیس کا علاقہ قرار دینے کے تین متضاد بیانات پر مدعی درخواست گزار چوہدری عمران قیصرعباس ضلعی صدر عوامی نیشنل پارٹی چکوال الیکشن کمیشن میں اصالتا اہم دلائل دیں گے اور الیکشن کمیشن آف پاکستان سے درخواست کی جائے گی کہ اس مارکی کے بارے میں ڈسٹرکٹ الیکشن کمشنر چکوال،ڈپٹی کمشنر چکوال سے محکمہ مال کے ریکارڈ کے مطابق رپورٹ طلب کرنے کی استدعا کریں گے جہاں پر پی پی بیس کے ضمنی الیکشن میں ایم این ایز نے جلسہ میں شرکت کرکے خلاف ورزی کی تھی۔

چکوال(بیو رو رپورٹ)تھانہ نیلہ کے علاقہ میں چھ مسلح افراد نے زبردستی ٹریکٹر سے ہل چلاکر ایک شخص کی زمین پر قبضہ کرلیا۔ تصور حسین ولد جہانداد نے پولیس کو بتایا کہ ا سکی ملکیتی زمین پر غلام علی ،رضا علی اور محمد عجائب پسران دیوان علی ، محمد فاروق، مسماة فاخرہ بی بی اور مختار بی بی نے ٹریکٹر سے ہل چلا کر ناجائز قبضہ کر لیا اور جان سے مار دینے کی دھمکیاں دیں۔ سب انسپکٹر سکندر حیات نے مقدمہ درج کرکے ملزمان کی تلاش شروع کردی ہے جبکہ ڈوہمن پولیس نے اقدام قتل کے مقدمے میں ملوث ملزم سے دوران تفتیش تیس بور پستول برآمد کر لیا۔ سب انسپکٹر گلزار حسین نے استغاثہ دیا کہ دوران ریمانڈ ملزم عقیل احمد ولد محمد علی ساکن جنوال ٹاﺅن کی نشاندہی پر قصبہ ربال سے پستول تیس بوربرآمد کر لیا جو کہ اقدام قتل کی واردات میں استعمال کیا گیا تھا۔

چکوال(بیو رو رپورٹ) انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب کپیٹن (ر) عارف نواز خان نے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر چکوال کی خالی آسامی پر سنٹرل پولیس آفس لاہور میں تعینات گریڈ اٹھارہ کے پولیس آفیسر اور سابق ڈی پی او قصور ذوالفقار احمد کوبطور ڈی پی اوچکوال تعینات کرنے کا حکم دے دیا ہے جس کے بعد نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا ہے جبکہ ایس ایس پی (آر آئی بی) راولپنڈی ڈویثرن سکندر حیات خان سے ڈی پی او چکوال کا اضافی چارج واپس لے لیا گیا ہے۔سکندر حیات خان کے پاس دو دن چارج رہا ہے۔ یاد رہے کہ ذوالفقار احمد جس وقت ڈی پی او قصور تعینات تھے اس وقت قصور میں کم سن زینب کے ساتھ زیادتی اور اسکے قتل کا واقعہ پیش آیا تھا جس کے بعد وزیر اعلی پنجاب نے ان کو لاہور سنٹرل آفس میں رپورٹ کرنے کاحکم دیا تھا ۔

چکوال(بیو رو رپورٹ)پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اور میونسپل کمیٹی چکوال میں اپوزیشن لیڈر محمد اکبر بادشاہ اور ڈپٹی اپوزیشن لیڈر الحاج ملک محمد یوسف اعوان نے کہا ہے کہ میونسپل کمیٹی چکوال کی جانب سے کمیٹی باغ چکوال کا نام تبدیل کرکے سابق ایم پی اے چوہدری لیاقت علی خان کے نام سے منسوب کیا جانا شہریوں کے ساتھ بہت بڑا مذاق ہے اور پاکستان تحریک انصاف اس کی بھر پور مذمت کرتی ہے وہ صحافیوں سے گفتگو کر رہے تھے۔ اس موقع پر ان کا مزید کہنا تھا کہ میونسپل کمیٹی چکوال فوری پر علامہ ڈاکٹر محمد اقبال کے نام پر قائم کی گئی لابئریری کا نام بحال کریں اور اگر سابق ایم پی اے چوہدری لیاقت علی خان کے نام سے کسی جگہ کو منسوب کرنا ضروری ہے تو انکی پرائیویٹ پراپرٹی اور اڈے کا نام ان کے نام سے منسوب کیا جائے،انہوں نے مزید کہا کہ اگر میونسپل کمیٹی چکوال نے فیصلہ واپس نہ لیا تو ہائی کورٹ سے رجوع کر سکتے ہیں ، ایک سوال کے جواب میں انہوں نے بتایا کہ میونسپل کمیٹی چکوال کے جمعرات کے روز ہونے اجلاس میں اس معاملہ کو اٹھائیں گے۔اور میونسپل کمیٹی چکوال کی جانب سے مکمل اور شروع کیے جانے والے ترقیاتی منصوبہ جات پر ایم این اے میجر(ر) طاہر اقبال،ایم پی اے چوہدری سلطان حیدر علی خان کی جانب سے لگائے جانے والے افتتاح کے تمام بورڈز کو بھی ہٹانے کے لئے چیئرمین اور چیف آفیسر کو درخواست دے دی گئی ہے اسی طرح شہر میں ہونے والے تمام ترقیاتی منصوبہ جات کی تفصیلات بھی مانگی ہیں تاکہ چیئرمین میونسپل کمیٹی اور چیف آفیسر کی کرپشن کا سدباب کیا جاسکے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں