101

احتساب جرم ہے تو قوم کے مفاد میں کرتے رہیں گے، چیرمین نیب

پشاور(پاکستان اپ ڈیٹس)قومی احتساب بیورو (نیب) کے چیرمین جسٹس (ر) جاوید اقبال نے کہا ہے کہ احتساب جرم ہے تو قوم کے مفاد میں کرتے رہیں گے۔نیب خیبر پختونخواہ میں تقریب برائے تقسیم چیک سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے کہا کہ نیب کی تمام تر وفاداریاں صرف پاکستان کے ساتھ ہیں، شخصیت پرستی سے بالاتر ہو کر کرپشن مقدمات کی تفتیش اور تحقیقات کرتے ہیں، ملک 84 ارب ڈالر کا مقروض ہوچکا مگر ان پیسوں کا استعمال آج تک نظر نہیں آرہا، قرض کی مد میں لئے گئے اربوں ڈالر خرچ ہوتے کہیں نظر نہیں آئے، کسی سے سوال کیا جائے کہ آپ نے بطور محافظ اور نگراں ان رقوم کا کیا کیا، آپ کے پاس امانت تھی آپ نے قومی امانت کو کیسے خرچ کیا۔چیرمین نیب نے کہا کہ بیوروکریسی کی خدمات حکومت کے ساتھ نہیں بلکہ پاکستان کے ساتھ ہونی چاہئیں، نیب کو اپنے کسی اقدام پر کسی قسم کی تشہیر کی ضرورت نہیں، نیب قانون اور آئین کے دائرہ میں رہتے ہوئے اختیارات کا استعمال کرتا ہے، ناخداؤں کو کسی غلط فہمی میں نہیں رہنا چاہیئے، نیب آہنی ہاتھوں سے ملک سے کرپشن کے خاتمے کے لئے پرعزم ہے، احتساب کرنا قوم کے مفاد میں ہے، نیب کی کسی سے کوئی دشمنی نہیں، نیب ملک اور قوم کے لئے سب کچھ کررہا ہے، احتساب اگر جرم ہے تو یہ جرم قوم کے مفاد میں کرتے رہیں گے۔قومی ادارے کی طرف سے آپ کی عزت کو ملحوظ خاطر رکھ نوٹس بھیجے جاتے ہیں، آج تک ہر قدم نیب قانون اور آئین کے مطابق اٹھایا ہے نیب کو کوئی شوق نہیں ہے کہ وہ تھانیداری کرے، نیب کے نوٹس میرے ذاتی دعوت نامے نہیں ہوتے، سیاستدان اور بیورو کریٹ یہ نہ سمجھیں کہ نیب کی جواب طلبی پر ان سے کوئی زیادتی ہوئی، نیب کا آپ کا اپنا ادارہ ہے باہر سے لاکر مسلط نہیں کیا گیا، نیب کے کوئی سیاسی عزائم نہیں ہیں، الیکشن میں” الف“ آئے یا”ب“ آئے ، عوام جانیں اور ان کے ووٹ جانیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں