106

الیکشن2018میں اللہ اکبر تحریک کی بھرپور حمایت ،کرسی کے نشان پر لڑنے والوں کی کامیابی کے لئے کردار ادا کریں گے:سیف اللہ خالد

فیصل آباد(پاکستان اپ ڈیٹس)ملی مسلم لیگ کے صدر سیف اللہ خالد نے کہا ہے کہ الیکشن2018میں اللہ اکبر تحریک کی بھرپور حمایت کرتے ہیں۔کرسی کے نشان پر الیکشن لڑنے والوں کی کامیابی کے لئے کردار ادا کریں گے۔ہم نے پاکستان کو بچانا ہے۔ پاکستان بچانے کے لیے محب وطن لوگوں کی حمایت کرنی ہو گی اور انہیں ووٹ دینا ہو گا۔ہمارا آئین ہمیں سیاست کی اجازت دیتا ہے لیکن گیارہ ماہ سے ہمارا راستہ روکا جا رہا ہے۔عام انتخابات کے لیے کارکن تیار ہو جائیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے مرکزخیبر نشاط آباد فیصل آباد میں جمعہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔سیف اللہ خالد نے کہا کہ ملی مسلم لیگ سے پہلے ساڑھے تین سو جماعتیں رجسٹر ڈتھیں۔ ہم بھی رجسٹریشن کے لیے پہنچ گئے۔ہم نے نظریہ پاکستان کی بنیاد پر سب کو ملانے اور ملک کو معاشی و دفاعی طور پر مضبوط بنانے کا اپنا منشور پیش کیا۔ جس میں ملکی قانون کے خلاف کچھ نہیں۔ہم اپنا شفاف کردار لے کر کھڑے ہوئے اورہمارا آئین بھی ہمیں سیاست کی اجازت دیتا ہے۔ تقریبا 11 ماہ ہوگئے ہمیں سیاست کی اجازت نہیں دی جارہی۔ہم ہر عدالت اور الیکشن کمیشن میں کھڑے ہیں کہ کوئی اعتراض ہے تو بتائیں ہم ازالہ کریں گے۔ ہم خدمت انسانیت کی سیاست کرنا چاہتے ہیں۔ نظریہ پاکستان اور مظلوم کشمیریوں کی یو این کی قرار دادوں کے مطابق ان کی حمایت و مدد کرنا چاہتے ہیں لیکن تاخیری حربے استعمال کیئے جارہے ہیں۔ ہم استقامت سے کھڑے ہیں۔ وہ وقت آنے والا ہے رکاوٹیں ڈالنے والوں کی راہ میں رکاوٹیں کھڑی ہوجائیں گی۔انہوں نے کہا کہ آج ہم اعلان کرنے لگے ہیں جو کہا تھا کرکے دکھایا ہم 2018 کے الیکشن میں پوری توانائی کے ساتھ نظریہ پاکستان کی چھتری تلے کھڑے ہوں گے۔ملی مسلم لیگ نے فیصلہ کیا ہے ملک بھر میں کرسی کے نشان پر الیکشن لڑنے والوں کی حمایت کرتے ہیں۔ کرسی کا نشان اللہ اکبر تحریک کا ہے۔ اس کے نشان پر ملک بھر میں جو بھی امیدوار کھڑے ہوں گے ان کی بھرپور حمایت کریں گے۔ لاکھوں کارکنان تیار ہوجائیں 2018 کے الیکشن میں کامیابی آپ کا مقدر ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ جیسے مدینہ کو برداشت نہیں کیا جارہا تھا مدینہ کے خلاف سازشیں کی جارہی تھیں وہی صورتحال آج پاکستان کے خلاف ہیں۔ جو مدینہ منورہ کا جرم تھا وہی پاکستان کا جرم ہے۔ مدینہ کی ریاست بھی کلمہ طیبہ کی بنیاد پر قائم ہوئی اور پاکستان بھی کلمہ طیبہ کی بنیاد پر قائم ہوا۔ آج امت بدر کے جزبوں کے ساتھ کھڑی ہوجائے ساری دنیا مل کر بھی ہمارا کچھ نہیں بگاڑ سکتی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں