100

ورلڈ کالمسٹ کلب کے زیر اہتمام مرکزی چیئرمین محمد دلاور چودھری کے ساتھ ایک شام کااہتمام

لاہور(پاکستان اپ ڈیٹس )ورلڈ کالمسٹ کلب کے زیر اہتمام مرکزی چیئرمین محمد دلاور چودھری کے ساتھ ایک شام کااہتمام کیاگیا ۔باوقارتقریب سے سینئر صحافیوں،کالم نگاروں نے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ محمد دلاور چودھری قلم قبیلے کے جرنیل ہیں۔ ان کی طاقت ہماری ایٹمی قوت ہے۔نظریہ پاکستان کے لئے انہوں نے ہمیشہ کردار ادا کیا۔محمددلاور چودھری دبنگ شخصیت اور اعلیٰ قلمکار ہیں۔میڈیا کے رجحان میں لوگ اخبار بدلتے ہیں لیکن دلاور چودھری پچیس برسوں سے نوائے وقت میں ہی ہیں۔ورلڈ کالمسٹ کلب ایک خاندان کی مانند ہے۔محمد دلاور چودھری کے ورلڈ کالمسٹ کلب کا چیئرمین بننے سے قلمکاروں کو نڈر قیادت میسر آئی۔ان خیالات کا اظہار ورلڈ کالمسٹ کلب کے مرکزی سیکرٹری جنرل محمدناصراقبال خان، ویمن ونگ کی مرکزی صدرنازبٹ ، مرکزی سینئر نائب صدرسردارمرادعلی خان،کاشف سلیمان،نائب صدورمیاں محمد اشرف عاصمی ایڈوکیٹ،ملک غضنفراعوان ،مرکزی سیکرٹری مالیات محمدآصف عنایت بٹ، مرکزی ایڈیشنل سیکرٹری جنرل ممتاز اعوان،مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل مظہر چوہدری،ویمن ونگ کی مرکزی سینئر نائب صدر ڈاکٹر نبیلہ طارق،مرکزی ڈپٹی سیکرٹری اطلاعات محمدشاہد محمود،آصف مصور ،سلمان طارق بٹ،حذیفہ نوشاہی اور یحییٰ مجا ہدنے مقامی ہوٹل میں خطاب کرتے ہوئے کیا۔ مقررین نے محمد دلاور چودھری کی صحافتی خدمات کو سراہااور خراج تحسین پیش کیا گیا۔ورلڈ کالمسٹ کلب کے چیئرمین محمد دلاور چودھری نے کہا کہ میرا گلہ ہے کہ پڑھنے والے ہمار ے معاشرے میں نہیں رہے۔پڑھنے والے ہونے چاہئے ،کالم نگاروں کو رسپانس ملنا چایئے۔میں سائنس کا سٹوڈنٹ تھا،میٹرک اے پلس میں کیا۔پھر ایف سی کالج چلے گئے۔ایف ایس سی میں انجینرنگ کے لئے دو نمبر کم تھے۔میرے خاندان میں زیادہ فوجی تھے۔انکل کے دوست تھے انہوں نے کہا کہ ایم سی سی کرواتے ہیں۔میں ادھر نہیں گیا۔بی ایس سی میں چلا گیا اور لکھنے کی طرف رجحان تھا ،ایم اے پولٹیکل سائنس کیا جب میرے چالیس ،پچاس کالم چھپ چکے تھے توایک دن میرا تعارف مجید نظامی صاحب سے کسی نے کروا دیا تو انہوں نے بلایا اور کہا کہ نوکری کیوں نہیں کرتے۔انہوں نے منیر کو بلایا اور کہا کہ مجھے نیوز روم میں بٹھا دو میں تب سے وہیں بیٹھا ہوں۔اس میں بھی دہائیوں کا ذکر ہے۔پچیس سال سے نوائے وقت میں ہوں۔انہوں نے کہا کہ یحییٰ مجاہد کی محبت،سرپرستی کا طویل سلسلہ ہے،انہوں نے حوصلہ افزائی کی،ہمیشہ بڑوں کی طرح گائیڈ کرتے ہیں۔ورلڈ کالمسٹ کلب سے مجھے محبت ملی ہے۔کلب کے ممبران میرے لئے اثاثہ ہیں۔یحییٰ مجاہد نے کہا کہ محمد دلاور چودھری سے کئی حوالوں سے تعلق ہے۔نوائے وقت ڈاکٹر مجید نظامی کا اخبار ہے ،ان کے ساتھ باپ بیٹے والا رشتہ تھا،نظامی صاحب اپنے بعد جس کو زیادہ اہمیت دیتے تھے وہ دلاور چوھدری ہیں۔نظریہ پاکستان کے حوالہ سے دلاور چودھری نے ثابت کیا کہ جو پالیسی تھی اسی پر چل رہی ہے۔ہمیشہ محبت بانٹنے والے ہیں،میرے ہمسائے ہیں۔ہمارا بہت پیارا تعلق ہے۔دعا ہے کہ دلاور چوھدری،ورلڈ کالمسٹ کلب کے ساتھ یہ تعلق ہمیشہ قائم رہے۔ناز بٹ نے کہا کہ محمددلاور چودھری دبنگ شخصیت اور اعلیٰ قلمکار ہیں۔بہترین مقرر ہیں۔ کشمیر کے حوالہ سے سیمنار میں جو نعرہ لگا یا وہ سب پر بھاری تھا۔میری دعائیں،نیک تمنائیں سب کے لئے ہیں۔ورلڈ کالمسٹ کلب ایک خاندان کی طرح ہے ۔محمد ناصر اقبال خان نے کہا کہ دو دہائیوں سے محمددلاور چودھری سے شناسائی ہے،دوستوں کے لیے راستے ہموار کرتے ہیں۔ ان کے مزاج،شکل و صورت میں کوئی تبدیلی نہیں آئی۔میڈیا کے رجحان میں لوگ بھاگم بھاگ لگے ہوئے ہیں،اخبارات بدلتے ہیں لیکن میں نے جب سے فیلڈ میں آیا انہیں نوائے وقت میں ہی دیکھ رہا ہو ں۔دعا ہے کہ اللہ انہیں مزید ترقی دے۔محمد آصف عنایت بٹ نے کہا کہ آج کی شام دلاور چوھدری کے ساتھ ہے۔ہم خوش نصیب ہیں کہ ایک صاف ستھرا،بے داغ کردار،نہ بکنے والا نہ جھکنے والا ہمارا لیڈر ہے۔ہر شخص کی شخصیت کے کچھ رنگ ہوتے ہیں ان میں دوستی ہے،عاشق دل کے مالک ہیں۔محمددلاور چودھری صاحب ورلڈ کالمسٹ کلب کی میٹنگ میں آئے تومیں نے کہا کہ آپ ہمارے قائد ہیں۔قلم قبیلے کے جرنیل ہیں،ان کے آنے سے کلب نے سٹینڈ لیا۔سردار مراد علی خان نے کہا کہ دلاور چودھری نے ورلڈ کالمسٹ کلب کی باگ ڈور سنبھالی تو تبدیلیاں آئیں۔احسن طریقے سے چلایا،ناصر اقبال خان کا بھی شکریہ ادا کرتے ہیں کیونکہ وہ گلدستہ بنانے میں کامیاب ہو گئے۔ہم اس وقت سے اکٹھے ہیں جب اس کی بنیاد ڈالی گئی۔دلاور چودھری ایک خوبصورت انسان،اخلاقی ،دینی اعتبار سے ہیں۔ڈاکٹر نبیلہ طارق نے کہا کہ محمددلاور چوھدری سے تعلق بیس سال سے زائد عرصے کا ہے۔ورلڈ کالمسٹ کلب میں چیئرمین آنے سے کافی تبدیلی آئی،ہم آپس میں ایک دوسرے کو فیملی کی مانند سمجھتے ہیں۔دعا ہے کہ اللہ اسی طرح رشتوں کو قائم رکھے اور ہم اسی طرح محبتیں بانٹتے رہیں۔ملک غضنفر اعوان،سلمان طارق بٹ،ممتاز اعوان،میاں محمد اشرف عاصمی ایڈوکیٹ،مظہر چوہدری نے بھی ورلڈ کالمسٹ کلب کے چیئرمین محمد دلاور چودھری کی صحافتی خدمات کو خراج تحسین پیش کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں