45

حکمرانوں کی ناکام پالیسیوں کے سبب ملک بدحالی کا شکار ہے۔ تعلیم کے حصول کو مشکل بنا دیا گیا ہے: انجینئر نوید قمر

مریدکے (پاکستان اپ ڈیٹس ) ملی مسلم لیگ یوتھ ونگ کے کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا ہے کہ حکمرانوں کی ناکام پالیسیوں کے سبب ملک بدحالی کا شکار ہے۔ تعلیم کے حصول کو مشکل بنا دیا گیا ہے۔ پڑھا لکھا طبقہ بیروزگاری کے ہاتھوں مجبور ہو کر دہشتگردی کا ایندھن بن رہا ہے۔ نوجوان کو مایوسیوں اور اندھیروں میں دھکیلا جا رہا ہے۔ ملی مسلم لیگ یوتھ ونگ کے قیام کا مقصد نوجوان نسل کونظریہ پاکستان سے روشناس کرواتے ہوئے اقبال کا شاہین بناناہے۔ ملی مسلم لیگ مریدکے کے زیر اہتمام ننگل ساہداں میں یوتھ کنونشن کا انعقاد کیا گیا جس میں سینکڑوںنوجوانوں نے شرکت کی۔ اس موقع پر شرکاءمیں بھرپور جوش و خروش دیکھنے میں ملا اور ” پاکستان زندہ باد“ ”ملی مسلم لیگ زند باد“ کے پر شگاف نعرے بلند کئے۔ کنونشن کے مہمان خصوصی صدر ملی یوتھ ونگ انجینئر نوید قمر، نائب صدر ملی یوتھ ونگ محمد راشد اور سیکریڑی جنرل ملی مسلم لیگ یوتھ ونگ عبدالحنان خالد تھے۔ صدر ملی مسلم لیگ یوتھ ونگ انجینئر نوید قمر نے کنونشن کے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نوجوانوں کو مایوسیوں میں دھکیل دیا گیا۔ تعلیم جیسے بنیادی حقوق کو پہنچ سے دور کر دیا گیا۔نوجوانوں کیلئے نوکریوں کے مواقع پیدا نہیں کئے گئے۔ جس کے سبب پڑھا لکھا طبقہ بیرون ملک نوکری کرنے کو ترجیح دے رہا ہے۔حکمرانوں نے کرپشن کے سوا کچھ نہیں کیا۔ کشمیر کسی انتخابی جماعت کے ایجنڈے پر نہیں ہے۔ بھارت پاکستان کے پانی کو بند کرنے کیلئے نئے نئے منصوبوں کا آغاز کر رہا ہے تاکہ پاکستان کو خشک ساحلی کا شکار کیا جا سکے۔ نائب صدر ملی مسلم لیگ یوتھ ونگ محمد راشد نے خطاب کر تے ہوئے کہا کہ پاکستان کی بنیاد نظریہ پاکستان ہے ۔ دو قومی نظریہ ہی مستحکم پاکستان کی ضمانت ہے۔ جواں خون پاکستان کی طاقت ہے۔ بدقسمتی سے حکمرانوں نے نوجوان طبقے کو مسلسل نظر انداز کیا۔ ملی مسلم لیگ یوتھ ونگ نوجوانوں کی صلاحیتیو ں کو بروئے کار لائی گی۔ پاکستان بنانے میں سب سے اہم کردار نوجوانوں کا تھا۔اب یہی نوجوان استحکام پاکستان کا ہراول دستہ بن کر آنے والی نسلوں کو محفوظ پاکستان کا تحفہ دیں گے۔ سیکریڑی جنرل ملی مسلم لیگ یوتھ ونگ عبدالحنان خالد نے کنونشن کے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان لاالہ الا اللہ کی بنیاد پر حاصل کیا گیا تھا۔ اس کے حاصل کرنے میں سب سے اہم کردار نوجوانوں کا ہی تھا۔ آج بھی پاکستان کا بچاﺅ دو قومی نظریے کی بنیاد پر ہی ممکن ہے۔ اس مقصد کیلئے لا الہ الا اللہ پر کھڑے افراد اور گروہ کا ساتھ دینے کی ضرورت ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں