76

پاکستان علماءکونسل ملک میں انتشار اور فساد پھیلانے کی کسی کوشش کو کامیاب نہیں ہونے دی گی:طاہر محمود اشرفی

لاہور(پاکستان اپ ڈیٹس ) پاکستان علماءکونسل ملک میں انتشار اور فساد پھیلانے کی کسی کوشش کو کامیاب نہیں ہونے دی گی ۔قرآن کریم کے احکامات کے مطابق اچھائی کے کاموں میں تعاون اور غیر شرعی امور میں محاسب کا کردار ادا کریں گے ، پاکستان علماءکونسل کے حمایت یافتہ 90فیصد امیدواران نے کامیابی حاصل کی ہے ، عمران خان کی تقریر میں بیان کیے گئے اہداف کے حصول میں مکمل تعاون کریں گے ، یہ بات پاکستان علماءکونسل کے مرکزی قائدین کے لاہور میں ہونے والے اجلاس کے بعد فیصلوں کا اعلان کرتے ہوئے کہی گئی ، اجلاس کی صدارت پاکستان علماءکونسل کے چیئرمین حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے کی ، اجلاس میں علامہ عبد الحق مجاہد ، مولانا محمد شفیع قاسمی ، مولانا نعمان حاشر، حاجی محمد طیب شاد قادری ، مولانا انوار الحق مجاہد ، شبیر یوسف گجر ، مولانا عبد الحمید صابری ، مولانا طاہر عقیل اعوان ، مولانا احسان احمد حسینی ،قاری شمس الحق ،قاری مبشر رحیمی ، مولانا محمد اشفاق پتافی اور دیگر نے شر کت کی ۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ پاکستان علماءکونسل کسی احتجاجی تحریک کا حصہ نہیں بنے گی او رعلماء، خطباء، مدارس اور مساجد کو سیاسی مقاصد کیلئے کسی کو استعمال نہیں کرنے دیا جائے گا، پاکستان علماءکونسل اور عمران خان کا پاکستان کو مدینہ منورہ کی طرز کی ریاست بنانے کا ہدف مشترکہ ہے اس کے حصول کیلئے ہر سطح پر پاکستان تحریک انصاف سے تعاون کیا جائے گا، اجلاس میں تمام مذہبی و سیاسی جماعتوں سے اپیل کی گئی کہ آئینی و قانونی جدوجہد کو لازم پکڑیں اور ملک میں انارکی پھیلانے کی کسی بھی کوشش کو کامیاب نہ ہونے دیں، اجلاس میں تمام سیاسی و مذہبی جماعتوں کے کامیاب ہونے والے ممبران سے اپیل کی گئی کہ وہ پارلیمنٹ کا حصہ بنیں اور پارلیمنٹ سے بائیکاٹ کرنے کی بجائے اپنے مطالبات اور اپنا احتجاج قانون کے دائرے میں رہتے ہوئے استعمال کریں، اجلاس میں پاک فوج اور ملک کے سلامتی کے اداروں کے خلاف چلائی جانے والی مہم کی بھرپور مذمت کرتے ہوئے کہا گیا کہ کسی بھی گروہ، جماعت کو پاک فوج اور ملک کے سلامتی کے اداروں کے خلاف مہم چلانے کی اجازت نہیں دی جائے گی، پاکستان علماءکونسل نے عمران خان اور ان کی جماعت کو وفاق ، صوبہ پنجاب اور خیبر پختونخواہ میں اور آصف علی زرداری اور بلاول بھٹو زرداری کو سندھ میں اکثریت حاصل کرنے پر مبارکباد پیش کی ۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ یکم ستمبر سے ملک بھر میں علماءکنونشن منعقد کیے جائیں گے اور پاکستان علماءکونسل کے اہداف کے حصول کیلئے بھرپور اور پر امن جدوجہد کی جائے گی۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان علماءکونسل کے مرکزی چیئرمین حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ پاکستان علماءکونسل مدارس اور مساجد کی محافظ ہے اور کسی بھی جماعت یا گروہ یا فرد کو علماءاور مدارس کے نام پر سیاست نہیں کرنے دی جائے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں