214

اقتدار کی رسہ کشی میں ملکی مفادات قربان ہو رہے ہیں: صاحبزادہ شاہ محمد اویس نورانی

لاہور(پاکستان اپ ڈیٹس )جمعیت علماءپاکستان کے مرکزی سکریٹری جنرل صاحبزادہ شاہ محمد اویس نورانی نے کہا ہے کہ اقتدار کی رسہ کشی میں ملکی مفادات قربان ہو رہے ہیں۔ سپریم کورٹ کا متنازعہ ہو جانا بہت بڑا المیہ ہے۔ قومی قائدین جوش کی بجائے ہوش سے کام لیں۔ سیاسی انجیئرنگ میں مصروف غیر سیاسی قوتیں جان لیں کہ ملک کسی نئے تجربے کا متحمل نہیں ہو سکتا۔ جمہوری تسلسل کے ذریعے ہی سیاست کی تطہیر ہو گی۔ سازش کے تحت سیاستدانوں کو بدنام کیا جا رہا ہے۔ خفیہ ہاتھ باریک کام میں مصروف ہیں۔ بیلٹ کا فیصلہ نہ مانا گیا تو بُلٹ والے حاوی ہو جائیں گے۔ احتساب کو انتقام بنانے کی بجائے عوام کو ووٹ کے ذریعے احتساب کرنے کا موقع دیا جائے۔ سیاسی عدم استحکام کسی کے مفاد میں نہیں۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے جے یو پی کے مرکزی و صوبائی عہدیداران سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ صاحبزادہ شاہ اویس نورانی نے مزید کہا کہ شام کی خانہ جنگی منی ورلڈ وار میں تبدیل ہو چکی ہے۔ بھارت چاہ بہار میں بیٹھ کر سی پیک کے خلاف سازشیں کرے گا۔ امریکہ، اسرائیل اور بھارت کے گٹھ جوڑ نے خطے کا امن داو پر لگا دیا ہے۔ امریکہ افغانستان میں بھارت کا کردار بڑھا کر امن دشمنی کا مظاہرہ کر رہا ہے۔ یمن میں جنگ بندی کے لئے مسلم حکمران اپنا کردار ادا کریں۔ دنیا بھر میں مسلمانوں کا خون پانی کی طرح بہایا جا رہا ہے۔ خطے میں بھارتی عزائم گھمبیر صورت اختیار کر رہے ہیں۔ جے یو پی کے سیکریٹری جنرل نے کہا کہ جے یو پی نے ضلعی عہدیداروں سے قومی و صوبائی اسمبلی کے امیدواروں کی فہرستیں مانگ لی ہیں۔ جے یو پی کا پارلیمانی بورڈ امیدواروں کا چناو کرے گا۔ جے یو پی کی شوری نے ایم ایم اے کو فعال کرنے کی منظوری دے دی ہے۔ مارچ میں ایم ایم اے کی سرگرمیاں شروع ہو جائیں گی۔ آئندہ الیکشن میں دینی جماعتوں کا ووٹ تقسیم نہیں ہونے دیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں