135

پروفیسر حافظ محمد سعید کی اپیل پر ملک بھر میں نماز جمعہ کے بعدڈاکٹر عبدالمنان وانی اور معراج بنگرو سمیت دیگر کشمیری شہداءکی غائبانہ نماز جنازہ ادا کی گئی

لاہور( پاکستان اپ ڈیٹس )امیر جماعةالدعوة پاکستان پروفیسر حافظ محمد سعید کی اپیل پر ملک بھر میں نماز جمعہ کے بعدڈاکٹر عبدالمنان وانی اور معراج بنگرو سمیت دیگر کشمیری شہداءکی غائبانہ نماز جنازہ ادا کی گئی۔ صوبائی دارالحکومت لاہور کی طرح گوجرانوالہ،فیصل آباد،اسلام آباد،راولپنڈی، مظفر آباد، میرپور،ملتان، کراچی، حیدرآباد، کوئٹہ، پشاور، سیالکوٹ، جہلم،شیخوپورہ، وہاڑی اور دیگر شہروں میں علماءکرام نے خطبات جمعہ میں غاصب بھارتی فوج کی طرف سے نہتے کشمیری مسلمانوں پر ڈھائے جانے والے ظلم و بربریت کو موضوع بنایا اوربھارتی ظلم و دہشت گردی کے خلاف مذمتی قراردادیں پاس کی گئیں۔اس دوران کشمیر سمیت دنیا بھر کے مظلوم مسلمانوں اور وطن عزیز پاکستان کی سلامتی و استحکام کیلئے خصوصی دعائیں کی گئیں۔ جامع مسجد القادسیہ چوبرجی لاہور میں امیر جماعة الدعوة حافظ محمد سعید نے کشمیری شہداءکی غائبانہ نماز جنازہ پڑھائی۔قبل ازیں خطبہ جمعہ کے دوران حافظ محمد سعید نے کہا کہ کشمیر میں ظلم و دہشت گردی کی انتہا کر دی گئی ہے۔ ڈاکٹر عبدالمنان وانی جنہوں نے علی گڑھ یونیورسٹی سے پی ایچ ڈی کر رکھی تھی انہیں شہید کر دیاگیا۔پی ایچ ڈی ڈاکٹر،سکالر کی شہادت دنیا کے لئے پیغام ہے۔آج اعلیٰ تعلیم یافتہ لوگ میدانوں میں قربانیاں دے رہے ہیں۔ڈاکٹر عبدالمنان وانی اور معراج الدین بنگرو شہید کے نماز جنازہ میں ہزاروں کشمیریوں نے شرکت کی ۔انہوں نے کہا کہ کشمیری مسلمان وطن عزیز پاکستان کے لئے جانیں قربان کر رہے ہیں پاکستانی حکمرانوں کو بھی چاہیے کہ وہ ان کی ہر ممکن مددوحمایت کریں۔بیرونی قوتیں متحد ہو کر پاکستان پر دباﺅ بڑھا رہی ہیں تاکہ کشمیر پر بات نہ کی جاسکے‘یہ بہت بڑی سازش ہے۔کشمیری سازشوں کی زنجیریں کاٹ رہے ہیں۔

 

وہ خون کی قربانی سے آزادی کی تحریک پروان چڑھا رہے ہیں۔انڈیا اپنی غاصب فوج فوج کشمیر سے نکالے وگرنہ غیورکشمیری نوجوان اپنے حق کے لئے میدان میں برسرپیکار رہیں گے۔انہوں نے کہا کہ مظلوم کشمیریوں کی مددکرنا امت مسلمہ پر فرض ہے۔ مسلم حکمرانوں کو چاہیے کہ وہ کشمیری مسلمانوں کی آزادی کیلئے باہم متحد ہو جائیں۔ حافظ محمد سعید نے کہاکہ سیاسی و مذہبی جماعتیں اللہ کے قرآن پر اکٹھی ہو جائیں۔ہماری سیاست بھی ایسے ہونی چاہئے جیسے نماز،روزہ ہے۔جب ہم نے سیاست کو عبادت مان لیا تو حالات بدل جائیں گے۔پاکستان لاالہ الااللہ کی جاگیر ہے۔اسے مدینہ کی طرز پر ریاست بنانے کے لئے ضروری ہے کہ نبی اکرم ﷺ کی سیرت پر عمل کیا جائے۔جب ایسا ہو گا تو پاکستان دنیا میںان شاءاللہ ایک بڑی قوت بن کر ابھرے گا۔انہوں نے کہاکہ ہم نے اسلام کی صحیح دعوت پیش کرنی اور قوم کی تربیت کرنی ہے۔ اسلام آباد میںجامع مسجد قبا آئی ایٹ مرکز میں پروفیسر حافظ عبدالرحمان مکی نے کشمیری شہداءکی غائبانہ نماز جنازہ پڑھائی اور خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھارت نے کشمیر پر زبردستی قبضہ کیا جس پر اقوام عالم خاموش تماشائی بنی رہی۔کشمیر میں ظلم و دہشت گردی سے پوری دنیا کا امن متاثر ہورہا ہے۔ اگر بین الاقوامی دنیا یہ چاہتی ہے کہ امن و امان ہوتو دہشت گرد ملکوں کو مسلمانوںپر ظلم و بربریت سے باز رکھنا چاہئے۔حافظ عبدالغفار المدنی نے جامع مسجد خیبر نشاط آباد فیصل آباد میں ہزاروں افراد پر مشتمل جمعہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج کشمیری مسلمان مدد کے لئے پکار رہے ہیں۔مسلم امہ کو ان کی آواز پر لبیک کہنا چاہیے اور ان کی ہر ممکن مدد کرنی چاہیے۔ اس موقع پر انہوںنے کشمیری مسلمانوں کیلئے خصوصی دعا بھی کروائی۔گوجرانوالہ میں مزمل اقبال ہاشمی،کراچی میں جامع مسجد تقویٰ گلشن اقبال میں مفتی عبداللطیف،سیالکوٹ میں محمد احسان اللہ،حیدر آبادسندھ میں فیصل ندیم،کوئٹہ میں رانامحمد اشفاق،مرکز ام القریٰ رحیم یار خان میں عطاءاللہ غلزئی نے کشمیری شہداءکی نماز جنازہ پڑھائی۔جماعةالدعوة پاکستان کے سربراہ پروفیسر حافظ محمد سعید کی اپیل پرراولپنڈی، مظفر آباد، میرپور،ملتان، کراچی، کوئٹہ، پشاور، جہلم،شیخوپورہ، وہاڑی ، ننکانہ، سیالکوٹ، جہلم، اوکاڑہ، ساہیوال، بہاولپور،ڈی جی خاں، قصور، باغ، کوٹلی، میر پور آزاد کشمیراور دیگر شہروں میں بھی کشمیری شہداءکی غائبانہ نماز جنازہ ادا کی گئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں