36

کشمیری حقیقت میں تکمیل پاکستان کی جنگ لڑ رہے ہیں:محمد ناصر اقبال خان

لاہور( پاکستان اپ ڈیٹس )ہیومن رائٹس موومنٹ انٹرنیشنل کے مرکزی صدر محمد ناصر اقبال خان نے کہا ہے کہ سات دہائیوں سے کشمیری بھارت سرکار کا ظلم سہہ رہے ہیں اس کے باوجود ان کے جذبہ آزادی میں کوئی کمی نہیں آئی۔ کشمیری حقیقت میں تکمیل پاکستان کی جنگ لڑ رہے ہیں ۔حالیہ تحریک میں پی ایچ ڈی سکالرز کی شہادت عالمی دنیا کے منہ پر طمانچہ ہے۔ کشمیری سال کے 365 دن بھارت کے خلاف یوم سیاہ مناتے ہیں جو بھارت کے خلاف ریفرنڈم ہے۔ حکومت پاکستان کشمیر کمیٹی کو متحرک کرے اور عالمی دنیا کے سامنے بھارت کی ریاستی دہشت گردی کو بے نقاب کیا جائے۔ مقبوضہ کشمیر پر بھارت کے فوجی قبضے کے 71 سال مکمل ہونے پر محمد ناصر اقبال خان نے کہا کہ اقوام متحدہ سمیت انسانی حقوق کے ادارے کشمیر میں ہونے والے حالیہ ظلم کا نوٹس لیں اور مسئلہ کشمیر یو این او کی قراردادوں اور مقبوضہ کشمیریوں کی مرضی اور خواہش کے مطابق حل کرائیں۔ بھارت جتنے مرضی ظلم و ستم کرلے وہ کشمیریوں کے جذبہ آزادی کو نہیں دباسکتا اور نہ ہی ان سے ان کی آزادی کا حق چھین سکتاہے۔ بھارت اور بھارتی فوج کی مقبوضہ کشمیر میں بڑھتی ہوئی زیادتیاں کشمیریوں میں بھارت کے خلاف نفرت پیدا کررہی ہیں، مقبوضہ کشمیر کے کشمیری کسی بھی صورت بھارت کے ساتھ نہیں رہنا چاہتے بلکہ اپنا پیدائشی حق آزادی چاہتے ہیں۔آزادی کشمیریوں کا حق ہے جو انہیں ہر صورت ملنا ہی چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر کی تحریک میں خواتین بھی اہم کردار ادا کر رہی ہیں ۔دختران ملت کی چیئر پرسن سیدہ آسیہ اندرابی بھی پاکستان کا پرچم لہرانے کے جرم میں جیل میں قید ہیں ۔ کشمیری طالبات کو بھی تشدد کا نشانہ بنایا جاتا ہے۔ تعلیمی اداروں میں بھارتی فوج ظلم و ستم کرتی ہے اس کے باوجود بھارت جمہوریت کا علمبردار ہے جس نے کشمیریوں سے ان کا حق آزادی چھین رکھا ہے ۔محمد ناصر اقبال خان نے کہا کہ حکومت پاکستان کشمیریوں کی تحریک کی بھرپور حمایت کرے ۔ماضی کے حکمران نے مودی کے ساتھ دوستی کی وجہ سے کشمیریون کا اعتماد کھویا اب اس اعتماد کو بحال کرنے کے لیے ضروری ہے کہ پاکستان کشمیریوں کا حقیقی وکیل بنے۔ کشمیر کمیٹی کا چیئرمین مشعل ملک کو بنا کر اسے فعال کیا جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں