81

ملک سے بدعنوانی کا خاتمہ نیب کی اولین ترجیح ہے، چیئرمین نیب

لاہور(پاکستان اپ ڈیٹس )چیئرمین قومی احتساب بیورو نے ڈی جی نیب لاہور کو میگاکرپشن مقدمات کو ترجیحی بنیادوں پر منطقی انجام تک پہنچانے کی ہدایت کردی۔چیئرمین قومی احتساب بیورو جسٹس (ر)جاوید اقبال نے نیب لاہور آفس کا دورہ کیاجہاں انہیں ڈائریکٹر جنرل نیب لاہورکیجانب سے لاہور بیورو کی مجموعی کارکردگی اور زیرِ تفتیش کیسز پر جامع بریفنگ دی۔ چیئر مین نیب نے 56 کمپنیز کیس ، پیراگون سٹی اسکینڈل، آشیانہ اقبال کرپشن اور پنجاب پولیس فنڈز میں مبینہ بدعنوانی سمیت دیگرمیگا کرپشن کیسز میں پیش رفت کا جائزہ لیا.اس موقع پر چیئرمین نیب کا کہنا تھا کہ نیب کرپشن فری پاکستان کے خواب کو تعبیر بخشنے کیلئے کوشاں ہے جبکہ ملک سے بدعنوانی کا خاتمہ نیب کی اولین ترجیح ہے۔چیئرمین نیب نے ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ میگا کرپشن کے مقدمات کو ترجیحی بنیادوں پر منطقی انجام تک پہنچایا جائے جس کیلئے میرٹ،شفافیت اور ٹھوس شواہد کی بنیاد پر اقدامات اٹھائے جائیں۔چیئر مین نیب نے کہا کہ نیب کسی ملزم کے میڈیا ٹرائل کے حق میں نہیں تاہم میڈیا سے درخواست کی کہ نیب سے متعلق خبروں کو تصدیق کے بعد چلائیں اور کسی بھی سلسلے میں قیاس آرائیوں سے گریز کریں، نیب میں شواہد کے بغیر کسی ملزم کے خلاف کارروائی عمل میں نہیں لائی جاتی، نیب کے تمام اقدامات ٹھوس شواہد کی بنیاد پرہی اٹھائے جاتے ہیں۔نیب کی حوالات میں قید ملزمان کو آئین کی روشنی میں دی جانیوالی سہولیات کا جائزہ لیتے ہوئے چیئرمین نیب کا کہنا تھا کہ نیب میں تمام ملزمان کو نا صرف جیل مینول سے بڑھ کر سہولیات فراہم کی جارہی ہیں بلکہ ان کی عزتِ نفس کا آئین و قانون کے دائرہ کار میں رہتے ہوئے باقاعدہ خیال بھی رکھا جا رہا ہے تاہم نیب کے تفتیشی عمل میں مداخلت اور بے جا ڈھیل کا تصور موجود نہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں