114

وزیر اعظم عمران خان کابینہ کے ہمراہ اقوام متحدہ دفتر کے باہر دھرنا دیں‘کشمیریوں کی مددوحمایت کیلئے عملی اقدامات کئے جائیں: پروفیسر حافظ محمد سعید

لاہور(پاکستان اپ ڈیٹس )امیر جماعةالدعوة پاکستان پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ مظلوم کشمیریوںنے تحریک آزادی میں قربانیاں پیش کرنے کا حق ادا کر دیا۔وزیر اعظم عمران خان کابینہ کے ہمراہ اقوام متحدہ دفتر کے باہر دھرنا دیں‘کشمیریوں کی مددوحمایت کیلئے عملی اقدامات کئے جائیں۔ مودی سرکار نے انتخابات کی آمد پر مسلمانوں کی قتل و غارت گری تیز کر دی۔کشمیرکی طرح بھارت میں بھی مساجد و مدارس اور مسلمانوں کی زندگیاں محفوظ نہیں ہیں۔ مدینہ جیسی ریاست بنانی ہے تو ملک کی معیشت کو اسلامی اصولوں کے مطابق ڈھالا جائے۔مسلمانوں کی سیاست، معیشت و معاشرت سمیت ہر عمل اسلامی شریعت کے مطابق ہونا چاہیے۔ وہ جامع مسجد القادسیہ میں خطبہ جمعہ کے دوران ہزاروں افراد کے اجتماع سے خطاب کر رہے تھے۔نماز جمعہ کے بعد حالیہ دنوں میں بھارتی ظلم و دہشت گردی کے نتیجہ میں شہید ہونےو الے کشمیری شہداءکی غائبانہ نماز جنازہ بھی ادا کی گئی۔حافظ محمد سعید نے اپنے خطاب میں کہاکہ کشمیر میں ظلم و دہشت گردی کی انتہا ہو چکی‘ اس وقت پورا کشمیر جل رہا ہے۔ پچھلے تین ہفتوں سے بہت تکلیف دہ خبریں آرہی ہیں۔ روزانہ نہتے کشمیریوں کا خون بہایا جارہا ہے لیکن اس انتہائی حساس مسئلہ پر بے حسی کی کیفیت دکھائی دے رہی ہے۔ وزیر اعظم عمران خان نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کو ٹیلیفون پر کشمیریوں پر بھارتی مظالم بند کروانے کیلئے کہا ہے‘ یہ اچھی بات ہے تاہم حکومتوں کو اس سے آگے بڑھ کر اقدامات کرنے چاہئیں۔ وزیر اعظم دھرنوں کا تجربہ رکھتے ہیں، انہیں چاہیے کہ وہ اپنی کابینہ کو ساتھ لیں‘ نیویارک میں اقوام متحدہ دفتر کے سامنے دھرنا دیں اور اعلان کر یں کہ جب تک کشمیریوں کو ان کا حق نہیں ملتاوہ واپس نہیں جائیں گے۔ اس وقت سب سے اہم کام یہ ہے کہ مظلوم کشمیریوں کیلئے ایسے عملی اقدامات اٹھائے جائیں کہ جس سے انہیں حوصلہ ملے۔کشمیری قوم جس طرح لازوال قربانیاں پیش کر رہی ہے وہ پوری دنیا کیلئے مثال بن چکے ہیں کہ آزادی کی تحریکیں اس طرح برپا کی جاتی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ غاصب بھارتی فوج پہلے نام نہاد سرچ آپریشن کے دوران اگر کسی جگہ کشمیری مجاہدین کی موجودگی کا دعویٰ کرتی تھی تو ایک دو گھروں کو بارود سے اڑایا جاتا تھا لیکن اب وہ پوری بستی تباہ کردیتے ہیں‘ کوئی انہیں پوچھنے والا نہیں اور بین الاقوامی دنیا نے آنکھیں بند کر رکھی ہیں۔ شدید سردی میں چھوٹے چھوٹے بچے اور خواتین کھلے آسمان تلے رہنے پر مجبور ہیں‘ ہمیں ان کی ہر ممکن مدد کرنی چاہیے۔ انہوں نے کہاکہ بھارت میں آئندہ دنوں میں انتخابات ہونے والے ہیں۔ جوں جوں الیکشن قریب آرہے ہیں ہندوانتہاپسند تنظیم بی جے پی نے نریندر مودی کی قیادت میں نہتے مسلمانوں کے خون بہانے کا عمل تیز کر دیا ہے۔گائے ذبیحہ کے نام پر مسلمانوں کا قتل معمول بن چکا ہے۔ بھارت میں اس وقت مسلمانوں کی مسجدیں اور عزتیں و حقوق محفوظ نہیں ہیں۔ مودی سرکار پاکستان کیخلاف ہرزہ سرائی اور تشدد کی لہر پروان چڑھا کر انتخابات جیتنا چاہتی ہے۔ انہوںنے کہاکہ مسلم حکمران بیرونی قوتوں کی غلامی سے نکلیں اور خطوں و علاقوں میں اسلامی شریعت نافذ کی جائے۔ پاکستان بھی مدینہ جیسی ریاست اسی وقت بن سکتا ہے جب یہاں قرآن وسنت کی حکمرانی ہو گی۔ اسلام دشمن طاقتیں آئی ایم ایف جیسے ادارے بنا کر مسلمانوں کی معیشت کنٹرول کر رہی ہیں۔کبھی شرح سود بڑھانے کا مطالبہ اور ڈالر کی قیمت میں اضافہ کیا جاتا ہے تو کبھی پارلیمنٹ میں اپنی مرضی کے مطابق قانون سازیوں کیلئے دباﺅ بڑھائے جاتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ مسلم حکمران لوگوں کو اسلام کی آزادی اور روشنی کا راستہ دکھائیں۔ اسلام صرف چند عبادات کے مجموعہ کا نام نہیں ہے۔ اغیار کے وضع کردہ قانونی ڈھانچوں اور نظاموں کی بجائے کتاب و سنت کی تعلیمات پرصحیح معنوں میں عمل کیا جائے۔ اسی سے آسمانوں سے رحمتیں و برکتیں نازل ہوں گی اور مسلمانوں کو درپیش مسائل حل ہوں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں