69

مقبوضہ کشمیر: پلوامہ کا محاصرہ، نوجوان شہید، 9 افراد گرفتار، حریت رہنمائوں کی نظر بندی کیخلا ف احتجاج

سرینگر(پاکستان اپ ڈیٹس ) مقبوضہ کشمیر کے علاقے پلوامہ کے 2مضافاتی دیہات میں پولیس نے چھاپوں کے دوران 9نوجوانوں کو گرفتار کیا۔ پولیس کے سپیشل آپریشن گروپ نے یہ چھاپے آری ہل اور آڑی گام پلوامہ کے دو نزدیکی دیہات میں ڈالے۔ پولیس کا کہنا کہ گرفتار شدہ نوجوانوں سے سنگباری میں ملوث ہونے کے بارے میں پوچھ تاچھ کی جارہی ہے۔ ادھر سوگن شوپیاں کا فوج اور پولیس نے محاصرہ کیا اور جنگجوئوں کی موجودگی کی اطلاع پر گھر گھر تلاشی کارروائی کی۔تاہم کئی گھنٹوں تک جاری رہنے والے آپریشن کے دوران جنگجوئوں کی موجودگی کا پتہ نہیں چلا جس کے بعد محاصرہ اٹھایا گیا۔ ادھر کشمیرہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن نے تاریگام کولگام میں محاصرے کی مذمت کی ہے۔ سابق وزیر اعلی محبوبہ مفتی نے دوٹوک الفاظ میں واضح کیا ہے مسئلہ کشمیر ایک سیاسی تنازع ہے اور اس کا فوجی حل نہیں نکل سکتا۔ انہوں نے کہا جب تک پاکستان کے ساتھ مذاکرتی عمل اور لوگوں کے ساتھ افہام و تفہیم کا راستہ نہیں اپنا یا جاتا حالات ٹھیک نہیں ہونگے۔ تحریک حریت جموں وکشمیر کے چیئرمین محمد اشرف صحرائی نے کہا بھارت فوجی طاقت کے بل بوتے پر کشمیریوں سے ان کا پیدائشی حق خودارادیت کبھی نہیں چھین سکتا۔ مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی ریاستی دہشت گردی جاری ہے۔ بھارتی فورسز نے پلوامہ میں ایک نوجوان کو شہید کردیا۔ مقبوضہ کشمیر میں حریت رہنمائوں کی نظربندی کیخلاف احتجاج کیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں