114

کشمیری پاکستان کی تکمیل کی جنگ لڑ رہے ہیں،پوری قوم مظلوم کشمیریوں کے ساتھ کھڑی ہے:سیف اللہ خالد

لاہور(پاکستان اپ ڈیٹس )ملی مسلم لیگ کے صدر سیف اللہ خالد نے کہا کہ قوم افضل گورو اور مقبول بٹ جیسے جوانوں کی قربانیاں نہیں بھول سکتی۔انہیں بنا کسی جرم کے بھارت سرکار نے پھانسی کے پھندے پر لٹکایا۔ کشمیری و پاکستانی قوم یک دل و یک جان ہیں، آزادی سے کم کسی فیصلے پر راضی نہیں ہوں گے۔ اگر حکمران پاکستان کا مطلب لا الہ الا اللہ سمجھتے ہیں تو ان پر لازم ہے کہ وہ کشمیریوں کی آزادی کے لیے عملی اقدام کریں۔ہمیں تمام فرقوں سے بالاتر ہو کر اتحاد کو پروان چڑھانا ہے۔ ہم پاکستانی قوم کو متحد کرکے ملک کو درپیش اندرونی اور بیرونی سازشوں کا مقابلہ کریں گے۔جمعہ کے اجتماع سے خطاب بعد ازاں مختلف وفود سے گفتگو کرتے ہوئے سیف اللہ خالد نے کہا کہ کشمیری پاکستان کی تکمیل کی جنگ لڑ رہے ہیں،پوری قوم مظلوم کشمیریوں کے ساتھ کھڑی ہے۔آج کشمیر کا نقشہ بدل چکا ہے۔ کشمیر کے سیاستدان، مردو خواتین و بچے ایک نکتے پر متحد ہیں۔ کشمیری سال میں صرف ایک مرتبہ پاکستان کا نعرہ نہیں لگاتے بلکہ پورا سال لاالہ الا اللہ کے نعرے لگاتے ہیں۔ آج ہم نے بھی وہی ماحول تشکیل دینا ہے۔ ہم اہل پاکستان میں شعور بیدار کریں گے۔ مظلوم کشمیریوں سے یکجہتی سیاسی مسئلہ نہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان ایک عظیم نظریے کی بنیاد پر معرض وجود میں آیا تھاملک دشمنوں کی خواہش ہے کہ اس ملک کو سیکولر بنا دیا جائے یہاں پر اسلامی تعلیمات کو مکمل طور پر ختم کر دیا جائے۔ آج ہمیں بیدار ہونے کا وقت ہے ان سازشوں کے مقابلے میں کھڑے نہیں ہونگے تو دشمن ہماری تہذیب پر کلچر اور تعلیم پر حملہ آور ہیں۔ وہ میڈیا کو جنگی ہتھیار کے طور پر استعمال کررہے ہیں۔ مستقبل میں ہمارے بچوں کو ایسا مخلوط ماحول دینے کا منصوبہ ہے جس میں اسلامی تعلیمات کے لیے کوئی جگہ نہ ہو۔ ہمارے بچوں کو نظریہ پاکستان سے بیگانہ کیا جارہا ہے۔ اگر نظریہ پاکستان کو بچانا چاہتے ہو تو ہمیں اسی طرح قربانیوں کے لیے تیار ہونا ہونا ہوگا جو 1947 میں لاالہ الا اللہ کے پاکستان کے لیے دی گئی تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں