161

طلباءزرعی یونیورسٹی فیصل آبادکے زیراہتمام زرعی یونیورسٹی میں ”کشمیر، ہم سب کا” کے عنوان سے یکجہتی کشمیر واک کی گئی

فیصل آباد(پاکستان اپ ڈیٹس )طلباءزرعی یونیورسٹی کے زیراہتمام زرعی یونیورسٹی میں ”کشمیر، ہم سب کا” کے عنوان سے یکجہتی کشمیر واک کی گئی۔ واک میں طلباءکے ساتھ ساتھ طالبات کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔جس کی قیادت وائس چانسلر زرعی یونیورسٹی فیصل آباد پروفیسر ڈاکٹر ظفر اقبال نے کی۔ یونیورسٹی مارکیٹ سے شروع ہونے والی واک مین گیٹ پر اختتام پذیر ہوئی۔جس میں طلبا و طالبات نے بھارتی بربریت کے خلاف اور مظلوم کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کیلئے پرشگاف نعرے بلند کئے۔ شرکاءنے ہاتھوں میں پلے کارڈ بھی اٹھا رکھے تھے۔جن پر ”کشمیر پاکستان کی شہہ رگ ہے، کشمیر بنے گا پاکستان، کشمیریوں سے رشتہ کیا، لا الہ الا اللہ، کشمیر میں بھارتی ظلم و تشدد پر اقوام متحدہ خاموش کیوں؟” جیسے جملے درج تھے۔ یکجہتی کشمیر واک کے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر ظفر اقبال نے کہا کہ بھارت کشمیریوں کو ظلم و تشدد کا نشانہ بنا کر تحریک آزادی کو کچل نہیں سکتا۔ بھارت اقوام متحدہ کی قراردادوں کو نظر انداز کرکے یو این چارٹر کی خلاف ورزی کا مرتکب ہوا ہے۔ نریندر مودی کسی بھول میں نہ رہے، پاکستان کا ہر نوجوان کشمیریوں کے شانہ بشانہ کھڑا ہے۔ پاکستانی طلبا و طالبات کشمیریوں کی خواہشات پر اثر انداز ہونے کی بھارتی کوششیں کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ بھارت اگر خطے میں امن چاہتا ہے تو کشمیریوں کو ان کی امنگوں کے مطابق حق خودرادیت دے۔ انسانی حقوق کی عالمی تنظیمیں بد ترین بھارتی مظالم پر خاموش تماشائی بنی ہوئی ہیں۔ کشمیر کی آزادی کے لیے مسلمانوں کا متحد و بیدار ہونا ضروری ہے۔ڈاکٹر ظفر اقبال نے مزید کہا کہ کشمیر میں ہونے والی انسانی حقوق کی شدید پامالیوں پر عالمی ادارے بھی چھپ سادھے بیٹھے ہیں۔ کشمیری، ناصرف کشمیر کی آزادی بلکہ تکمیل پاکستان کی جنگ لڑ رہے ہیں۔ کشمیر کی تحریک آج نوجوانوں کے ہاتھوں میں ہے۔ نوجوان طلبا کشمیر کی آزادی کیلئے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کر رہے ہیں۔ یکجہتی کشمیر واک میں شریک طلبا رہنماوں کا کہنا تھا کہ کشمیر پاکستان کی شہہ رگ ہے۔کشمیریوں کی بہادری اور جرات کو سلام پیش کرتے ہیں جو بھارتی مظالم کے سامنے ڈٹے ہوئے ہیں۔تکمیل پاکستان کی اس جنگ میں کشمیری اپنے آپ کو تنہا مت سمجھیں۔بلکہ پاکستانی طلبا و طالبات کشمیریوں کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں اور کشمیریوں کے پیغام کو عالمی دنیا تک پہنچاتے رہے گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں