410

نیب کاشہبازشریف کی بیٹی کے گھر پرمبینہ چھاپہ۔۔۔صرف نوٹس وصول کرانے گئے تھے۔۔۔نیب کی وضاحت جاری

لاہور(پاکستان اپ ڈیٹس ) لاہور میں نیب نے پولیس کے ہمراہ مسلم لیگ ن کے رہنما شہبازشریف کی بیٹی کے گھر پر چھاپہ مارا جبکہ نیب نے ایک وضاحتی بیان میں کہا ہے کہ نیب کی ٹیم پولیس کےہمراہ صرف پیشی کا نوٹس وصول کرانےگئی تھی اوروصولی کے بعد ٹیم واپس آگئی ہے۔دوسری طرف ذرائع کا کہنا ہے کہ پولیس نےماڈل ٹاﺅن میں شہبازشریف کی صاحبزادی کےگھرکامحاصرہ کیا۔پولیس نےشہبازشریف کی بیٹی کے گھربغیراطلاع کے چھاپہ ماراہے۔نیب نےآمدن سے زائد اثاثہ کیس میں شہباز شریف کے اہلخانہ کو 16 اپریل کو طلب کررکھا ہے۔شہباز شریف کی اہلیہ کو 17 اپریل جبکہ ان کی بیٹیوں رابعہ اور جویریہ کو 18 اور19 اپریل کو طلب کر رکھا ہے۔دوسری طرف ترجمان مسلم لیگ (ن) مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ نیب نے پولیس کےہمراہ شہباز شریف کی بیٹی کے گھر کا گھیرائوکرکے چھاپا مارا ہے۔ پولیس نے ماڈل ٹائون ایچ بلاک میں واقع شہبازشریف کی بیٹی کے گھربغیر اطلاع کے چھاپہ مارا، یہ اقدام کسی بھی نوٹس کے بغیر اٹھایا گیا جو قابل مذمت اور تشویش کا باعث ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں