232

داعش کا اسلام اور مسلمانوں سے کوئی تعلق نہیں ہے: حافظ محمد طاہر محمود اشرفی

لاہور (پاکستان اپ ڈیٹس )شامی مسلمانوں کی نسل کشی کی جا رہی ہے ، اقوام متحدہ اور اسلامی سربراہی کانفرنس بے بس ہو چکی ہیں، حکومت پاکستان ، سعودی عرب اور دیگر اسلامی ممالک کے ساتھ مل کر شام کی عوام پر ہونے والے مظالم کو بند کروائےں ، روس ، امریکہ ، ایران ، شامی عوام کو اپنے مستقبل کا فیصلہ کرنے دیں ، یمن ، شام ، عراق میں مداخلتوں کا اصل ہدف ارض الحرمین الشریفین ہے ، اسلامی اور عرب ممالک میں بیرونی مداخلتیں بند ہونی چاہئیں ، داعش جیسی تنظیمیں مسلم امة کو تباہ کرنے کیلئے بنائی گئی ہیں ،داعش کا اسلام اور مسلمانوں سے کوئی تعلق نہیں ہے ، یہ بات پاکستان علماءکونسل لاہور کے زیر اہتمام لاہور پریس کلب کے باہر شام کے مظلوم عوام پر ہونے والے مظالم کے خلاف احتجاجی مظاہرہ سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہی ، مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان علماءکونسل کے مرکزی چیئرمین اور وفاق المساجد پاکستان کے صدر حافظ محمد طاہر محمود اشرفی ، مولانا محمد شفیع قاسمی ، حاجی محمد طیب شاد قادری ، مولانا اسد اللہ فاروق ، مولانا محمد اشفاق پتافی ، مولانا اسید الرحمن سعید ، مولانا قاری عبد الحکیم اطہر ، مولانا زبیر زاہد ، مولانا عبد القیوم ، مولانا محمد اسلم قادری ، مولانا شمس الحق ، مولانا حسان احمد حسینی ، مولانا مفتی شہباز عالم فاروقی،مولانا عبد اللہ رشیدی ، مولانا عبد اللہ حقانی،مولانا مبشر رحیمی ، ڈاکٹر خالد نے کہا کہ امت مسلمہ کو فرقہ وارانہ بنیادوں پر تقسیم کرنے کی سازش کی جا رہی ہے ، مضبوط اسلامی ممالک کو تباہ کیا جا رہا ہے ، شام کی عوام پر روس اپنے نئے میزائلوں کا تجربہ کر رہا ہے لیکن مسلم اور عالمی دنیا خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے ، انہوں نے کہا کہ روس ، امریکہ اور ایران شام کی عوام کو اپنے مستقبل کا فیصلہ کرنے دیں، دہشت گرد تنظیموں کی حمایت کرنے والے ممالک مسلم ممالک کی تباہی کا سبب ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ شام ، عراق ، یمن کے امن کو تباہ کرنے والوں کا اصل ہدف ارض الحرمین الشریفین ہے ،جس کے تحفظ اور دفاع کیلئے ہر لمحہ امت مسلمہ کو مستعد رہنا ہو گا ۔انہوں نے کہا کہ ملت اسلامیہ کی قیادت کو مسلم امة کے مسائل کے حل کیلئے سنجیدہ رویہ اختیار کرنا ہو گا، انہوں نے کہا کہ پاکستان علماءکونسل کے تحت شام کے مظلوم عوام کی حمایت میں بھرپور تحریک چلائی جائے گی اور حکومت پاکستان ، سعودی عرب اور ترکی سے اپیل کرتے ہیں کہ فوری طور پر شام کے مظلوم مسلمانوں پر ہونے والے مظالم کو رکوانے کیلئے میدان میں آئیں اور اسلامی سربراہی کانفرنس کا اجلاس بلا کر واضح حکمت عملی مرتب کی جائے۔انہوں نے پاکستان کے صاحب خیر اور تاجر حضرات سے اپیل کی کہ وہ شام کی مظلوم عوام کی امداد کیلئے آگے آئیں اور شامی مسلمانوں کی ہر سطح پر امداد کی جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں